187

مسلم لیگ ن آزادکشمیرکی حکومت کاخاتمہ ،بیرسٹرسلطان محمودنے پریس کانفرنس میں سب بتادیا

میرپور(اسلام آباداپ ڈیٹس) پاکستان تحریک انصاف آزادکشمیر کے صدر اور سابق وزیر اعظم آزاد کشمیر بیر سلطان محمود چوہدری نے کہاہے کہ آزادکشمیر سے تعلق رکھنے والے بیرون ممالک میں آباد کشمیریوں کوووٹ کاحق دلانے کیلئے میں نے عدالت العالیہ آزادکشمیر میں رہٹ پٹیشن دائرکردی ہے عدالت کے معزئز جج نے فریقین کونوٹس جاری کرتے ہوئے طلب کرلیاہے پاکستان سے بیرون ملک گئے لوگوں کوزیراعظم پاکستان عمران نے ووٹ کاحق دلوایا اور آزادکشمیراوورسیز کو یہ حق میں دلاؤں گا بیرون ممالک میں آباد کشمیری ہمارے وطن کے بہترین سفارت کارہیں اورمسئلہ کشمیر کودنیا بھر میں اجاگرکرنے میں ان کاایک خاص رول ہے اوزیراعظم پاکستان عمران خان نے میرپور ان کاایک خاص رول ہے وزیراعظم پاکستان عمران خان میرپور میں ائیرپورٹ بنانے کااعلان کردیاہے تارکین وطن کی جائز شکایات کا ازالہ کرنے کیلئے ہرممکن اقدام اٹھائیں گے اور سرمایہ کار ی کیلئے تحفظ کی گارنٹی بھی دیں گے میں نے آزادکشمیر سے کرپشن کے خاتمہ کیلئے احتساب ایکٹ پاس کرواکر احتساب بیورو کاقیام عمل میں لایا جس سے اس وقت میری حکومت کے دووزراء بھی گرفتار ہوئے میں نے کرپشن کے خاتمہ کیلئے ہر ممکن کام کیاہے جنرل مشرف نیب کادائرہ کار آزادکشمیر تک بڑہانا چاہتا تھا میں نے بحیثیت وزیراعظم اپنی شناخت پر سمجھوتہ نہیں کیا کشمیری عوام کوحق ہے کہ وہ اپنی آزادی کی جنگ لڑیں اوروزیراعظم فاروق حیدر یہ کہتا ہے کہ وہ سوچیں گے کہ کس ملک کے ساتھ الحاق کریں ان کی غلطی ہے فاروق حیدر حکومت کوختم کرنے میں ہمیں کوئی جلدی نہیں ہے وہ اپنے اعمال سزا پائیں گے ان خیالات کااظہار انہوں نے PWDریسٹ ہاؤس میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیابیرسٹرسلطان محمود چوہدری نے کہاکہ میں نے بحیثیت وزیراعظم آزادکشمیر پاکستا ن کی چارحکومتوں کو فیس کیاآزادکشمیر کے وزیراعظم راجہ فاروق حیدر کو چا ہیے کہ وہ راہ فرار اختیار نہ کریں اور حکومت پاکستان کے ساتھ اپنے معاملات پر بات چیت کریں فاروق حیدر کسی صوبہ جسے اختیارات اورکبھی کسی ملک سے الحاق کی باتیں کرتے ہیں انہوں نے کہاکہ پاکستان میں کرپشن کے خلاف پاکستان میں بے رحمانہ احتساب ہوگا اور آزادکشمیر میں بھی لیٹروں سے کوئی بچتا ہوا مجھے نظر نہیں آتا آزادکشمیر میں میگاکرپشن کے خلاف میں نے آواز اٹھائی جناح ماڈل ٹاؤن سکینڈل میں 2ارب روپے کی کرپشن کے ثبوت ( چیکوں) کی صورت میں نے اس وقت کے صدر پاکستان آصف علی زرداری کوپیش کیے تھے اور اس پرکر پشن کرنے والے مگرمجھ بچ گے اور رگڑا بیوروکریٹس کولگا اب بیوروکریٹس کوچا ہیے کہ وہ قانون قائدے کے مطابق کام کریں اور بے جامداخلت کوخاطر میں نہ لائیں انہوں نے کہاکہ میں نے اپنی جدوجہد میں تحریک آزادی کوا ولین ترجیح دی اور کرپشن کا خاتمہ میرا خواب ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں