57

گورنرپنجاب چوہدری سرورکوحکومت نے بڑاجھٹکادیدیا

لندن (اسلام آباداپ ڈیٹس) گورنر پنجاب کے صاحبزادے انس سرور کو شیڈوسیکرٹری آف ہیلتھ کے عہدے سے فارغ کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق انس سرورشیڈوسیکرٹری آف ہیلتھ کے عہدے سے فارغ کر دیا گیا تھا۔انس سرور گورنر پنجاب چودھری محمد سرور کے صاحبزادے ہیں۔انس سرور نے اس پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ ، شیڈو کیبنٹ سے اس طرح ہٹائے جانے کا دکھ ہے۔این ایچ ایس کے عملے اورمریضوں کی خدمت پرفخر ہے۔یاد رہے کہ چوہدری محمد سرور موجودہ اور 33ویں گورنر پنجاب ہیں۔اس سے قبل 2013ء میں پاکستان نواز شریف نے پنجاب کا گورنر چُنا۔ محمد سرور برطانوی شہری بھی رہ چکے ہیں جہاں وہ تین بار گلاسگو سے برطانوی پارلیمان کے رکن منتخب ہوئے اور 13 سال گلاسگو مرکز کی لیبر پارٹی کی طرف سے نمائندگی کی۔برطانوی پارلیمان کے پہلے مسلم رکن ہیں۔ان کے بعد ان کے بیٹے انس سرور اس نشست پر منتخب ہوئے۔ گورنر نامزد ہونے کے بعد چودھری محمد سرور نے دعوی کیا کہ انہوں نے برطانوی شہریت ترک کر دی ہے۔واضح ہو کہ چودھری سرور برطانیہ میں تھوک کریانہ، بنام یونائیٹڈ ہول سیل (اسکاٹ لینڈ) کا کاروبار چلاتے ہیں جس سے انہوں نے لاکھوں کمائے ہیں۔چوہدری سرور کے پاکستان آ جانے کے باوجود ان کے صاحبزادے انس سرور برطانیہ ہی میں مقیم ہیں ۔ جبکہ دوسری جانب وزیراطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ حکومت پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ اپوزیشن کو دے کر کرپشن چھپانے کی اجازت نہیں دے گی۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ حکومت پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ اپوزیشن کونہیں دے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں