81

مولانا فضل الرحمان کی گرفتاری کے لیے تیاریاں، ہائی کورٹ میں درخواست دائرکردی گئی ۔

لاہور (این این آئی ) جمعیت علماء اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی گرفتاری کے لیے ہائی کورٹ میں درخواست دائرکردی گئی ۔جے یوآئی(ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی گرفتاری اوران کے خلاف بغاوت کی کارروائی کرنے کے لیے لاہور ہائی کورٹ میں ندیم سرور ایڈووکیٹ نے درخواست دائرکردی۔ درخواست میں موقف اختیارکیا گیا کہ مولانا فضل الرحمان اپنی تقاریر سے لوگوں کو اکسا رہے ہیں جس سے ملک انتشار پھیلنے کا خدشہ ہے۔موقف میں مزید کہا گیا کہ مولانا فضل الرحمان نے بیان دیا کہ آزادی مارچ کے شرکا وزیر اعظم ہاس جا کرعمران خان کو گرفتارکر سکتے ہیں، لوگوں کو ریاست کے خلاف اکسانا بغاوت کے زمرے میں آتا ہے ، اس لیے مولانا فضل الرحمان کو گرفتار کر کے ان کے خلاف بغاوت کی کارروائی کا حکم دیا جائے۔
درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) کو حکم دے کہ وہ ٹی وی چینلز کو ہدایت کرے کہ وہ آزادی مارچ میں مولانا فضل الرحمان کی جانب سے نفرت اور اشتعال انگیز تقاریر نشر نہ کرے ساتھ ہی درخواست گزار نے کہا کہ جے یو آئی (ف) کے سربراہ جماعتوں کو جمہوری مخالف جماعتیں قرار دینے سے پہلے ماضی میں وزارتوں، فائدہ اٹھانے اور استحقاق کے لیے تقریباً ہر سیاسی جماعت کے ساتھ اتحاد کیا.
اس درخواست میں وفاقی حکومت اور جے یو آئی (ف) کے سربراہ کو فریق بنایا گیا اور موقف اپنایا گیا کہ مولانا فضل الرحمان اپنی تقاریر سے لوگوں کو اکسا رہے جس سے ملک میں انتشار پھیلنے کا خدشہ ہے، لہٰذا ان کے خلاف کارروائی کی جائے. واضح رہے کہ جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں حکومت مخالف آزادی مارچ اسلام آباد میں جاری ہے‘27 اکتوبر کو کراچی سے شروع ہونے والا یہ آزادی مارچ، سندھ اور پنجاب کے مختلف علاقوں سے ہوتا ہوا 31 اکتوبر کی رات میں اسلام آباد پہنچا تھا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں